پہلا ٹیسٹ: پاکستان فالوآن سے بال بال بچ گیا، پوری ٹیم 239 رنز بنا کر آؤٹ

لاہور: ماؤنٹ منگنوئی ٹیسٹ میں پاکستان فالو آن سے بال بال بچ گیا، بیٹنگ لائن ریت کی دیوار ثابت ہوئی. نیوزی لینڈ کے خلاف پہلی اننگز میں قومی ٹیم 239 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی یوں میزبان ٹیم کو 192 رنز کی برتری مل گئی ہے۔

ماؤنٹ مونگا نوئی ٹیسٹ کے تیسرے روز 30 رنز اور ایک وکٹ کے نقصان پر پاکستان نے بیٹنگ کا آغاز کیا تو شاہینوں کی وکٹیں یکے بعد دیگرے گرنے لگیں، اس دوران بارش کے باعث کھیل بار بار متاثر ہوا۔ عابد علی نے کریز پر قدم جمانے کی کوشش کی تاہم صرف 25 رنز دے سکے، انہیں جیمیسن نے شکار کیا، ان کے بعد محمد عباس 5 ، اظہر علی بھی 5، حارث سہیل 3 اور فواد اسلم 9 رنز پر کیویز فیلڈرز کو کیچ پکڑاتے اور پویلین واپس لوٹتے رہے۔

کپتان محمد رضوان نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کیا، فہیم اشرف کی شراکت داری میں کیویز کیخلاف مزاحمت دکھائی اور نصف سنچری مکمل کرتے ہوئے 71 رنز بنائے۔ فہیم نے بھی ہمت کی اور 91 سکور کئے تاہم یاسر شاہ اور شاہین آفریدی نے بھی دیگر بلے بازوں کی طرح خراب کارکردگی کا مظاہرہ کیا، بالترتیب 4 اور 6 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔ یوں پوری ٹیم 239 کے مجموعی سکور پر آوٹ ہو گئی۔ میزبان ٹیم کل 192 رنز کی برتری کے ساتھ چوتھے دن کا کھیل شروع کرے گی

گزشتہ روز میزبان ٹیم کے 431 رنز کے جواب میں پاکستانی اوپنرز شان مسعود اور عابد علی نے اننگز کا آغاز کیا تھا، شان نے کارکردگی دکھائے بنا جلد ہی واپسی اختیار کی اور صرف 10 رنز بنائے تھے۔ بولر یاسر شاہ کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ کے بیٹسمین نے وکٹ پر ٹھہر کر اسکور کیا، ہمارے بلے بازوں کو بھی وکٹ پر ٹھہرنا ہو گا، کرکٹ میں کیچ ڈراپ بھی ہوتے ہیں، تیسرے روز اسپنرز کو مدد ملے گی۔

اس سے قبل کیویز نے ماؤنٹ مونگا نوئی ٹیسٹ کے دوسرے روز کھیل کے آغاز پر 222 رنز اور 3 وکٹوں کے نقصان سے اننگز کا تسلسل جوڑا تو 209 رنز اضافے کے دوران باقی 7 بھی وکٹیں گنوا لیں۔ ولیمسن 129، بی جے والٹنگ 73، روز ٹیلر 70 اور ہینری نکلولز 56 رنز کے ساتھ نمایاں رہے۔
شاہین آفریدی نے 109 رنز کے عوض 4 وکٹیں حاصل کیں جبکہ یاسر شاہ نے 113 رنز کے عوض 3 کیویز بلے بازوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ نسیم شاہ، محمد عباس اور فہیم اشرف نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔