سانحہ مچھ: دھرنا چھٹے روز میں داخل، شہدا کمیٹی کا دھرنا ختم کرنے سے انکار

کوئٹہ:  سانحہ مچھ کے متاثرین کا غم کم نہ ہو سکا۔ کوئٹہ میں مچھ واقعہ کے خلاف ہزارہ برادری کا لاشوں کے ساتھ دھرنا چھٹے روز میں داخل ہو گیا، شہدا کمیٹی نے دھرنا ختم کرنے سے انکار کر دیا۔ مظاہرین اب بھی وزیر اعظم کی آمد کے منتظر ہیں۔

ملک کے مختلف حصوں سے سیاسی قیادت دھرنے کے شرکا سے یکجہتی کے لئے پہنچی، چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کراچی سے کوئٹہ پہنچے اور دھرنے میں شرکت کی، یوسف گیلانی اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ بھی ان کے ساتھ تھے، بلاول بھٹو سمیت پی پی قیادت نے لواحقین سے تعزیت کی۔

مریم نواز کی قیادت میں نواز لیگ کا وفد بھی کوئٹہ دھرنے میں پہنچ گیا۔ انہوں نے ہزارہ برادری کے رہنماؤں سے مچھ واقعہ پر تعزیت کا اظہار کیا، خواتین کو بھی دلاسہ دیا، احسن اقبال، پرویز رشید، مریم اورنگزیب، رانا ثناء اور دیگر رہنما بھی لیگی وفد میں شامل تھے۔ جے یو آئی کے رہنما عبدالغفور حیدری نے بھی دھرنے میں متاثرین سے اظہار یکجہتی کیا۔

جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق کا بھی اظہار یکجہتی کے لئے کوئٹہ آمد کا امکان ہے۔ دوسری طرف دھرنے کے شرکا وزیراعظم عمران خان کی آمد تک میتوں کی تدفین سے انکاری ہیں۔